Headlines

دہلی میں گرمی کاقہر، کورونا وباءکی یادہوئی تازہ،1ہی دن میں142لاشوں کے آخری رسومات ادا

دہلی میں گرمی کاقہر، کورونا وباءکی یادہوئی تازہ،1ہی دن میں142لاشوں کے آخری رسومات ادا

دہلی کارپوریشن کے بودھ گھاٹ میں کورونا کے بعد ایک ہی دن میں سب سے زیادہ آخری تعداد آخری رسومات انجام دیئے گئے ۔ بدھ کی رات 12 بجے تک 142 لاشوں کی نگم بودھ گھاٹ پر آخری رسومات ادا کی جا چکی ہیں۔

نئی دہلی: دہلی میں گرمی کی لہر بدستور تباہی مچا رہی ہے۔ دہلی کی گرمی اب قاتل بن چکی ہے۔ شدیدگرمی کی لہر سے ہونے والی اموات کی تعداد نے ہمیں کورونا وباء کی یاد دلا دی ہے۔ دہلی میں شدید گرمی کی وجہ سے اتنی اموات ہوئیں کہ شمشان گھاٹ پر بھی لمبی قطاریں لگ گئیں۔ جی ہاں، دہلی کارپوریشن کے بودھ گھاٹ میں کورونا کے بعد ایک ہی دن میں سب سے زیادہ آخری تعداد آخری رسومات انجام دیئے گئے ۔ بدھ کی رات 12 بجے تک 142 لاشوں کی نگم بودھ گھاٹ پر آخری رسومات ادا کی جا چکی ہیں۔ اس سے قبل کورونا کے دور میں 22 اپریل 2021 کو 253 لاشوں کی آخری رسومات انجام دی گئی تھی۔

نگم بودھ گھاٹ کے انتظامیہ کے مطابق اتنی بڑی تعداد میں اموات کی وجہ گرمی ہو سکتی ہے۔ تاہم، نگم بودھ گھاٹ ان لاشوں کی موت کی وجہ درج نہیں کرتا جو اس کے پاس آخری رسومات کے لیے آتی ہیں۔ اس سال جون کے مہینے میں اب تک دہلی کے نگم بودھ گھاٹ پر 1101 لاشوں کی آخری رسومات کی جا چکی ہیں۔ لواحقین کو بھی نگم بودھ گھاٹ پر لاشوں کی آخری رسومات کروانے کے لئے لمباانتظار کرنا پڑتا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *