Headlines

حماس نے 2 امریکی یرغمالیوں کو رہا کر دیا، غزہ میں مدد کی راہ ہموار

حماس نے 2 امریکی یرغمالیوں کو رہا کر دیا، غزہ میں مدد کی راہ ہموار

اقوام متحدہ تمام فریقوں کے ساتھ مل کر کام کر رہی ہے تاکہ غزہ کے لوگوں تک انسانی امداد پہنچانے کی شرائط کو واضح کیا جا سکے۔ جمعہ کو حماس نے دو امریکی یرغمالیوں کو رہا کیا،جس میں ایک ماں اور بیٹی شامل ہیں۔

دریں اثناء، اسرائیلی وزارت دفاع اور اسرائیلی فوج نے لبنان کی سرحد کے قریب شمالی شہر کریات شمونہ سے شہریوں سے انخلاء کو کہا ہے۔ انخلاء کے اس حکم کی منظوری وزیر دفاع یوو گیلانٹ نے دی تھی۔ یہ حکم اس خدشے کے درمیان آیا ہے کہ اسرائیل اور حماس کی جنگ ایک بڑے علاقائی تنازع میں بدل سکتی ہے۔ شمالی اسرائیل اور جنوبی لبنان کے درمیان گولہ باری، جو کہ ایران کے حمایت یافتہ گروپ حزب اللہ کا گھر ہے، حالیہ دنوں میں شدت اختیار کر گئی ہے۔ یہ اسرائیل اور حماس کے درمیان جاری جنگ کے درمیان بڑی خبریں ہیں۔

  1. حماس نے دو امریکی یرغمالیوں کو رہا کر دیا ہے۔ اس کے بعد امریکی صدر جو بائیڈن نے رہائی پانے والے دو امریکی یرغمالیوں کے ساتھ بات کرتے ہوئے اپنی ایک تصویر ٹویٹ کی۔
  2. امریکہ، کینیڈا، برطانیہ، جرمنی اور سعودی عرب نے اپنے شہریوں کو لبنان چھوڑنے کا کہا ہے۔ یہ ہدایات ایسے وقت دی گئی ہیں جب اسرائیل اور حماس کی جنگ اب 15ویں دن میں داخل ہو چکی ہے۔
  3. غزہ میں وزارت داخلہ نے کہا کہ اسرائیل اپنے فضائی حملوں میں تیزی لا رہا ہے۔ انہوں نے اسرائیل پر الزام لگایا ہے کہ وہ غزہ کی پٹی کے شمال، مرکز اور جنوب میں بہت سے شہریوں کے گھروں کو نشانہ بنا رہا ہے۔
  4. غزہ کی وزارت صحت نے کہا کہ اسرائیلی فورسز نے گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 350 سے زائد شہریوں کو ہلاک کیا، جس سے اس پٹی میں مرنے والوں کی مجموعی تعداد 4,137 ہوگئی۔
  5. غزہ کی وزارت صحت نے کہا کہ متاثرین کی ایک بڑی تعداد اب بھی تباہ شدہ عمارتوں کے ملبے تلے دبی ہوئی ہے۔ جس میں ممکنہ طور پر 720 بچے شامل ہیں جن کی گمشدگی کی اطلاع دی گئی ہے۔
  6. بہت سے لوگوں کو خدشہ ہے کہ غزہ کی پٹی پر اسرائیل کا زمینی حملہ وہاں پہلے سے موجود سنگین انسانی بحران کو مزید خراب کر سکتا ہے۔
  7. سیٹلائٹ تصاویر میں امدادی سامان سے لدے ٹرکوں کی لمبی قطاریں دکھائی دے رہی ہیں جو غزہ میں فلسطینیوں کو انتہائی ضروری امداد پہنچانے کے لیے مصر سے رفح سرحد عبور کرنے کے لیے انتظار کر رہے ہیں۔
  8. امریکی صدر جو بائیڈن نے حماس کے ہاتھوں یرغمال بنائے گئے دو امریکی شہریوں کی رہائی میں تعاون پر قطر اور اسرائیل کی حکومتوں کا شکریہ ادا کیا۔
  9. امریکی صدر جو بائیڈن نے کہا کہ امریکی انسانی امداد کی پہلی قسط اگلے ایک دو روز میں غزہ پہنچ جائے گی۔ رفح کراسنگ کا ذکر کرتے ہوئے بائیڈن نے وائٹ ہاؤس میں صحافیوں کو بتایا کہ مجھے یقین ہے کہ اگلے 24 سے 48 گھنٹوں میں آپ ان پہلے 20 ٹرکوں کو اندر جاتے دیکھیں گے۔
  10. امریکی محکمہ خارجہ کا کہنا ہے کہ غزہ کی پٹی میں تقریباً 600 امریکی پھنسے ہوئے ہیں جو دو ہفتوں سے مسلسل اسرائیلی بمباری کی زد میں ہے۔ پھنسے ہوئے لوگوں کا کہنا ہے کہ انہیں باہر نکلنے میں کوئی مدد نہیں ملی ہے۔
  11. فلسطینی علاقے میں داخل ہونے اور نکلنے کے دو ہی راستے ہیں اور دونوں بند ہیں۔ ہزاروں لوگ اس امید میں جنوبی سرحد پر ڈیرے ڈالے ہوئے ہیں کہ کوئی راستہ نکل آئے۔

7 thoughts on “حماس نے 2 امریکی یرغمالیوں کو رہا کر دیا، غزہ میں مدد کی راہ ہموار

  1. hey there and thanks to your information – I’ve definitely picked up something new from proper here. I did alternatively experience a few technical points the usage of this website, since I skilled to reload the website many instances prior to I may just get it to load correctly. I have been pondering if your web host is OK? Not that I’m complaining, however sluggish loading circumstances times will often have an effect on your placement in google and can harm your high-quality score if ads and ***********|advertising|advertising|advertising and *********** with Adwords. Well I’m including this RSS to my e-mail and can glance out for much more of your respective fascinating content. Ensure that you replace this again soon..

  2. Hey there! I simply wish to give you a big thumbs up for your great information you’ve got right here on this post. I am coming back to your website for more soon.

  3. Hi there! This blog post couldn’t be written any better! Reading through this article reminds me of my previous roommate! He constantly kept talking about this. I most certainly will send this information to him. Pretty sure he’s going to have a good read. I appreciate you for sharing!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *