Headlines

کیااب اسرائیل اورحزب اللہ کےدرمیان جنگ ہوگی؟ وزیراعظم نیتن یاہو نےغزہ پردے دیابڑابیان

کیااب اسرائیل اورحزب اللہ کےدرمیان جنگ ہوگی؟ وزیراعظم نیتن یاہو نےغزہ پردے دیابڑابیان

یتن یاہو نے کہا کہ غزہ میں اسرائیل کے حملے کم ہو رہے ہیں۔ اسرائیلی فوج مئی کے آغاز سے جنوبی سرحدی شہر رفح میں کارروائی کر رہی ہے۔ اس کا کہنا ہے کہ اس نے رفح میں حماس کو بھاری نقصان پہنچایا ہے

اسرائیل-حماس جنگ سے دور رہو ورنہ... بنجامن نیتن یاہو کی حزب اللہ کو وارننگ، لبنان میں ایسی تباہی آئے گی کہ..
اسرائیل-حماس جنگ سے دور رہو ورنہ… بنجامن نیتن یاہو کی حزب اللہ کو وارننگ، لبنان میں ایسی تباہی آئے گی کہ..

اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو نے اتوارکوکہاکہ رفح میں حماس کے خلاف لڑائی آخری مراحل میں ہے۔ جس کی وجہ سے اسرائیل نے اب لبنانی دہشت گرد گروہ حزب اللہ کا مقابلہ کرنے کے لیے شمالی سرحد پر مزید فوجی بھیجنے کی تیاریاں شروع کر دی ہیں۔نیتن یاہو کا یہ بیان ایک ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب اسرائیل اور حزب اللہ کے درمیان کشیدگی بڑھتی جا رہی ہے اور وہ جنگ کے قریب ہوتے نظر آ رہے ہیں۔ نیتن یاہو نے یہ اشارہ بھی دیا کہ غزہ میں شدید جنگ کا کوئی خاتمہ نظر نہیں آرہا ہے۔

حزب اللہ سے لڑنے کی تیاری

اسرائیلی رہنما نے کہا کہ اگرچہ فوج جنوبی غزہ کے شہر رفح میں اپنی موجودہ زمینی کارروائی مکمل کرنے کے قریب ہے لیکن اس کا مطلب یہ نہیں ہو گا کہ حماس کے خلاف جنگ ختم ہو گئی ہے۔ لیکن انہوں نے کہا کہ غزہ میں حزب اللہ سے لڑنے کے لیے فورسز کو آزاد کرنے کے لیے کم فوجیوں کی ضرورت ہوگی۔پی ایم نیتن یاہو نے کہا کہ اس سے ہمارے پاس اپنی کچھ فوجیں شمال میں بھیجنے کا امکان ہوگا اور ہم ایسا کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے لیے سب سے پہلی اور اہم چیز ملکی دفاع ہے لیکن اس کے ساتھ ساتھ ہزاروں بے گھر اسرائیلیوں کو بھی وطن واپس لانا ہے۔

جنگ کا خوف بڑھ گیا۔حماس کے 7 اکتوبر کو سرحد پار حملے کے تقریباً فوراً بعد، ایران کی حمایت یافتہ حزب اللہ نے اسرائیل پر حملہ کرنا شروع کر دیا، جس سے غزہ جنگ شروع ہوئی۔ اس کے بعد سے اسرائیل اور حزب اللہ تقریباً روزانہ ہی فائرنگ کا تبادلہ کر رہے ہیں، لیکن حالیہ ہفتوں میں لڑائی میں شدت آئی ہے۔جس سے مکمل جنگ کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *